واک-ان-انٹرویو اور ملازمت آپ کی ہوئی

0

اچھے کام کے لئے لوگ کیا نہیں کرتے ہیں۔ بڑی سے بڑے مراحل سے گزرتے ہیں، لیکن YS Team آپ کو بتا رہی ہے کچھ ایسی چھوٹی چھوٹی باتیں، جن پر عمل کر آپ تلاش کر سکیں گے حسب منشا کام اور کہہ سکیں گے، "ہیے ،  ہاِئے ، ہیلو! آئی ایم ورکنگ ۔۔۔"

کیا آپ کو معلوم ہے کہ کیا ہے واک-ان-انٹرویو؟ عام طور پر كمپٹیٹو امتحانات س 3 مراحل  میں منعقد  کئے جاتے ہیں۔ فرسٹ فیز میں سرکاری طور پر اپشنل سوال پوچھے جاتے ہیں، جن کا جواب دینا ہوتا ہے۔ دوسرے مرحلے  میں سوالات کا تحریری طور پر جواب دینا ہوتا ہے اور آخری مرحلے میں  انٹرویو ہوتا ہے، لیکن کچھ امتحانات ایسے بھی ہوتے ہیں جہاں ایک ہی بار امتحان لکھنا ہوتا ہے اور اس کے بعد براہ راست انٹرویوز اور كهيں- کہیں تو ملازمت  صرف  انٹرویو پر مبنی ہوتی ہے۔ جو ملازمت  انٹرويو پر مبنی ہوتی ہے، اسے ہی واک-ان-انٹرویو کہتے ہیں جس  کے تحت اسی دن سارا عمل پورا کرکے  امیدوار كے ہاتھ میں  تقرر نامہ  دے دیا جاتا، اگر  امیدوار  اس قابل ہے تو۔

اب کئی ایسی کمپنیاں ہیں جو واک-ان-انٹرویو منعقد کرتی ہیں۔   براہ راست لنکڈ ان سے آپ کے بارے میں معلومات جمع کرتی ہیں، فون کرتی ہیں، آپ کو بلاتی ہیں اور آپ کی قابلیت کے بل پر آپ کو کام دے دیتی ہیں۔

واك -ان-انٹرویو کے تحت پہلے آو- پہلے پاؤ والی بات لاگو ہوتی ہے۔ ہیلتھ کیئر، آئی ٹی، خوردہ اور کئی طرح کی سروس دینے والے سیکٹر اسے آزما رہے ہیں۔ اس میں کمپنیوں کے لئے امیدواروں کا انتخاب کرنا آسان ہو جاتا ہے۔ یہ بہت آسان اور فوری طور پر مکمل ہو جانے والی عمل ہے۔ لیکن اس میں شامل ہونے کے لئے کئی باتوں کا دھیان رکھنا ہوتا ہے۔ اگر توجہ نہیں رکھا تو ایک بہترین نوکری آپ کے پاس سے آ کر لوٹ جائے گی۔ کسی بھی انٹرویو میں جانیں سے پہلے سب سے زیادہ ضروری ہے کہ آپ کس طرح سے تیار ہو رہے ہیں۔ اس بات کا ہمیشہ خیال رکھیں، کہ آپ کی ہی طرح باقی کے لوگوں کو بھی ملازمت حاصل کرنے کی جلدی اور ضرورت ہے۔ بہترین کام ہو تو امیدواروں کی تعداد کئی گنا بڑھ جاتی ہیں، جس کی وجہ سے كمپٹشن مشکل ہو جاتا ہے۔ واک-ان-انٹرویو کے پہلے کسی طرح کا امتحان نہ ہونے کے سبب پینل میں بیٹھے اراکین کو آپ کی قابلیت اور ذہنی سمجھداری کے بارے میں معلوم نہیں ہوتا، اس لیے انٹرویو ہی ایک ایسا ذریعہ ہے جس میں آپ کو پینل میں بیٹھے لوگوں پر اپنا مثبت اثرات چھوڑ سکتے ہیں۔ اييے جانتے ہیں ان خاص پوائنٹس کے بارے میں جن پر غور کر کے ہی واک-ان-انٹرویو کے لئے جائیں ۔

اخبار یا دوسرے ذریعے واک-ان-انٹرویو کے بارے میں جاننے کے بعد اس کمپنی کے بارے میں تمام طرح کی اطلاعات اکٹھی کر لیں۔ اس کے لئے انٹرنیٹ کی مدد لیں۔ بہترین کمپنیوں سے متعلق تمام طرح کی اطلاعات گوگل پر دستیاب ہوں گی، ساتھ ہی آپ کی جان پہچان پر اگر کوئی اس کمپنی میں ملازم ہو تو اس سے بھی کمپنی کے ماحول اور کام کرنے کے طور طریقوں کے بارے میں معلومات لے سکتے ہیں۔

اپنے لیپ ٹاپ میں اپنی كوالفكیشن کا پاور پوائنٹ پریزنٹیشنز تیار کریں۔ پہلے سے تیار ہے، تو اس سے کمپنی کی کلچر اور ضرورت کے حساب سے اپ ڈیٹ کر لیں۔ اس پرےذینٹیشن میں ایجوکیشنل اور پروفیشنل دونوں طرح کی قابلیت کو شامل کریں۔

آپ پیشہ ورانہ اور ایجوکیشنل كوالفکیشن سے متعلق تمام سرٹیفکیٹ کو اچھی تک سے فائل میں لگا لیں۔ فائل صاف ستھری اور آسانی سے کھلنے اور بند ہونے والی ہو۔ کم از کم دو دو فوٹو کاپیاں اپنے پاس رکھیں اور اسے سلسلہ وار طریقے سے لگا دیں۔

آپ کے پاس کوئی بھی  پروفیشنل ریزیوم کی بھی 2-3 كاپياں،  قلم (سیاہ اور نیلی)، پروجیکٹ یا ریسرچ سے متعلق رپورٹ اور اس جاب سے متعلقہ شعبے میں پہلے حاصل شدہ تجربے کا سرٹیفکیٹ ہو۔

اگر آپ ضرورت محسوس کریں اور انٹرویو دینے سے پہلے نروس ہو رہے ہوں، تو اپنے کسی دوست یا رشتہ دار کی مدد سے یا پھر آئینے کے سامنے کھڑے ہوکر فرضی انٹرویو کا ریہرسل کر لیں اور انٹرویو میں پوچھے جانے والے سوالات کی ایک فہرست تیار کر لیں ۔

انٹرویو میں پہنے جانے والے لباس کو بھی پہلے سے تیار رکھیں۔ لباس نرم اور مہذب ہونا چاہئے، خاص طور پر جوتے آواز کرنے والے بالکل نہ ہوں۔

جس طرح آپ انٹرویو پینل کے سامنے موجود ہونے کے دوران تمام سلام کرتے ہیں اسی طرح آخر میں شکریا کہنا بھی نہ بھولیں۔

اس بات کا ہمیشہ ذہن میں رکھیں کہ انٹرویو تک پہچنے والے ہر شخص کا کتابی علم عموما یکساں ہی ہوتا ہے۔ تھوڑا بہت ہی فرق ہوتا ہے۔ ہو سکتا ہے علم کے معاملے میں آپ بیس ہوں، لیکن دوسرے کو انیس سمجھنے کی غلطی کبھی نہ کریں کیونکہ سلیکشن کا آخری دور باقی ہوتا ہے۔

ايئے جانیں اخری دور کے ان ضروری پوائنٹس کے بارے جن پر عمل کر کے پینل پر آپ اپنی امٹ نشان چھوڑ سکتے ہیں ۔

پینل کے سامنے جانے سے پہلے کچھ گہری سانس لیں۔ خود کو پروفیشنل مان کر پورے اعتماد کے ساتھ انٹرویو روم میں جائیں۔

کمرے کا دروازہ آہستہ سے کھول کر کمرے کے اندر ہلکی مسکراہٹ کے ساتھ ڈاخل ہوں۔ پینل میں بیٹھے لوگوں کو مناسب ڈھنگ سے سلام کریں۔ اس وقت آپ کی آواز بالکل واضح ہونی چاہئے۔ سر میں ادب ہونا چاہئے۔ یہ بھی یاد رکھیں کہ سر اور باڈی لینگویج کی ہم آہنگی برقرار رہے۔

انٹرویو میں جانے سے پہلے اپنے موضوع کے بارے میں دستیاب تمام معلومات پر ایک نظر ڈال لیں۔ اس کے لئے تمام موضوعات کے اہم پاینٹس آپ کے دماغ میں رکھیں اور اگر ضروری سمجھیں تو ایک کاغذ پر ان کو لکھ کر بھی اپنی جیب میں رکھ سکتے ہیں۔

اتنی تیاریوں کے بعد بھی اگر ناکامی آپ حصے آتی ہے تو مایوس نہ ہوں۔ بلکہ ان باتوں کا یاد رکھیں، کہ آپ سے غلطیاں کہاں کہاں ہوئیں۔ اپنی انہی غلطیوں سے سبق لیتے ہوئے آگے بڑھنے ۔ کیا پتہ جو چھوٹ گیا کچھ اس سے بہتر خوشی اپ کے  انتظار میں ہو۔