100 گاؤوں کو ڈیجیٹل بنائےگا آئی سی آئی سی آئی بینک

ڈیجیٹل لین دین کے نظام ملیگا فروغ

0

حکومت کی بڑے نوٹوں پر پابندی کے فیصلے کے بعد آئی سی آئی سی آئی بینک نے 100 دیہات کو ڈیجیٹل ادائیگی کے نظام کے تحت لانے کا ہدف رکھا ہے۔ اس کے تحت وہ ملک کے دور دراز علاقوں میں ڈیجیٹل لین دین اور تجارتی سرگرمیوں کو بڑھائے گا۔

چندہ كوچچر: منیجنگ ڈائریکٹر اور چیف ایگزكوٹیو آفسر، آئی سی آئی سی آئی بینک
چندہ كوچچر: منیجنگ ڈائریکٹر اور چیف ایگزكوٹیو آفسر، آئی سی آئی سی آئی بینک

آئی سی آئی سی آئی بینک جلد ہی 100 دیہات کو ' آئی سی آئی سی آئی ڈیجیٹل گاؤں' میں بدلنے کی کاروائی شروع کرے گا۔یہ نوٹوں پر پابندی کے بعد ملک بھر میں ڈیجیٹل ادائیگی کو بڑھانے کی کوششوں کا حصہ ہے، جس میں دیہی ہندوستان بھی شامل ہے۔ بینک نے کہا کہ یہ ملک کا سب سے بڑا دیہی پروگرام ہے جس میں انہیں ڈیجیٹل لین دین کی سہولت دی جائے گی۔

بینک کی منیجنگ ڈائریکٹر اور چیف ایگزیکٹیو آفیسر چندہ کوچر نے کہا کہ ہم ان دیہات میں نقد رقم کے لین دین کے نظام کی جگہ ڈجٹل لین دین کے نظام کوترقی دیں گے۔ پہلے 100 دنوں میں تقریبا 10000 دیہاتیوں کو تربیت دی جائے گی اور انہیں قرض فراہم کرائیں گے جس سے وہ اپنا خود کا کاروبار شروع کر سکیں۔ ادھر دوسری طرف بینک سہولت سے محروم گاؤں میں پہنچنے کے ارادے سے نجی شعبے کو آئی سی آئی سی آئی بینک نے مہاراشٹر، چھتیس گڑھ اور اڑیسہ میں موبائل شاخوں کی ابتدا کی ہے۔ اس کا مقصد گاہکوں کو آسانی سے مالی ضروریات پورا کرنے میں مدد کرنا ہے۔

آئی سی آئی سی آئی بینک کے منیجنگ ڈائریکٹر اور چیف ایگزیکٹیو آفیسر چندہ کوچر نے کہا، 'بینک سہولیات سے اب بھی محروم دیہات میں موبائل شاخیں شروع کی گئی ہیں۔ بینک کا دور دیہی علاقوں میں خدمات کی توسیع کی سمت میں یہ ایک اور قدم ہے۔ موبائل شاخیں 25000 دیہی صارفین کو خدمات دے رہی ہیں۔ اس سے صارفین کو اپنی روز مرہ کی مالی ضروریات کو آسانی سے پورا کرنے میں مدد ملے گی۔ یہ پہل بینک کی ملک کے دور دراز علاقوں میں بینک کی خدمات پہنچانے کے عزم کے مطابق ہے۔

آئی سی آئی سی آئی بینک نے ملک بھر میں فوجی علاقوں میں متروک نوٹوں کی تبادلہ کے لئے خصوصی کرنسی کے تبادلہ کیمپ لگائے۔ ایک بیان میں کہا ہے کہ وہ چھاؤنیوں، ارڈنینس فیکٹریوں، بٹالینوں اور ریجمنٹ جیسے مختلف فوجی علاقوں میں نوٹوں کی ادلا بدلی کا خصوصی بندوبست کیا گیا۔

اس کے ساتھ ہی اس نے جیسلمیر اور باڑمیر جیسے دور دراز کے سرحدی علاقوں میں بھی خاص اہتمام کیا ہے۔ بینک نے ان کیمپوں کے ذریعہ ہزاروں فوجیوں کو خدمات دی ہیں۔