اسٹارٹپ کے ساتھ آئیں گے کاروبار کے نئے طریقے

0

ایک سروے کے مطابق آدھے سے زیادہ بھارتی ایگزیکٹو اسٹارٹپ کے ساتھ کام کرنے کو تیار ہیں کیونکہ ان کا خیال ہے کہ نئے دور کی کمپنیوں کے ساتھ جڑنے سے ان کے کام کاج کے طریقے مؤثر ہوں گے اور نكھریں گے۔

ای وری سی آئی كلبس انٹرپرائز آئی ٹی ٹرینڈس اینڈ انویسٹمنٹ کے ایک سروے کے مطابق اگرچہ سال کے دوسرے نصف میں اب بھی اسٹارٹپ کے معاملے میں کچھ شبہ ہے۔ 'دی اسٹارٹپ جین: اے وہ فارورڈ' عنوان سے جاری سروے میں کہا گیا ہے کہ ملک کے ایگزیکٹو اسٹارٹپ کے ساتھ جڑنے اور اسٹارٹپ کاروباریوں کے رخ کو اپنانے سے اس فائدہ ہو سکتاہے۔

سروے میں شامل 244 چیف انفارمیشن آفیسر: سی ای او: میں سے تقریبا نصف نے اپنا کام مکمل کرنے کے معاملے میں اسٹارٹپ سرگرمیوں کو عمل میں لانے میں یقین ظاہر کیا ہے۔ اس میں کہا گیا ہے،

'50 فیصد سی ای او اسٹارٹپ کے ساتھ کام کرنے کو تیار ہیں جبکہ دوسرے نصف میں اس معاملے میں کچھ شبہات رکھتے ہیں۔'

سروے میں کہا گیا ہے کہ اسٹارٹپ کے ساتھ اتحاد سے کام موثر اور نئے طریقے سے پورا ہونا یقینی گے۔ اس سے لاگت کی بچت ہو سکتی ہے اور نئی ٹیکنالوجی اپنانے میں مدد مل سکتی ہے