کامیاب کاروباری بننا ہے توچھوڑنی پڑیں گی کچھ عادتیں بھی

کبھی کبھی ایسا وقت بھی آتا ہے جب بزنس میں کامیابی حاصل کرنے کے لئے ہمیں اپنی کچھ ایسی عادات چھوڑنی پڑتی ہیں، جنہیں چھوڑنا ناممکن سا لگتا ہے، لیکن انہیں چھوڑے بغیر آگے بڑھ پانا بھی ناممکن جان پڑتا ہے۔ اس وجہ سے ایک تاجر کے طور پر آپ کو معلوم ہونا چاہئے، کہ اس کے بزنس کی بہتری اور اسے آگے بڑھانے کے لئے آپ کو کیا کرنا ہے۔

0

کامیابی انسان کی خواہش پر نہیں، بلکہ اس کی محنت پر امنحصر ہوتی ہے۔ پھر وہ محنت کسی گھر کو بہتر طریقے سے چلانے کے لئے کی جائے یا پھر کسی بزنس کو کھڑا کرنے کے لئے۔ انسان کی محنت ہی اس کی کامیابی کی کہانی لکھتی ہے، ورنہ اچھے سے اچھا آئیڈیا بھی پیھکا پڑ جاتا ہے اور یہی بات تاجر پر بھی لاگو ہوتی ہے اور ایسے میں سب سے زیادہ ضروری ہے ان عادات سے بچ کر رہنا جو آپ کی کامیابی میں رکاوٹ بن سکتے  ہیں۔

"آپ اپنی قابلیت کو نكھارے۔ آپ کو اپنی قابلیت کے بل ہی پر دنیا جیت سکتے ہیں۔ اپنے بزنس کو جتنی اچھی طرح آپ سمجھتے ہیں اتنی اچھی طرح کوئی دوسرا نہیں سمجھ سکتا"

ایک تاجر کے طور پر آپ خود ہی اپنے سب سے بڑے دوست ہیں اور سب سے بڑے دشمن بھی۔ سوجھ بوجھ کے ساتھ اٹھایا گیا آپ بہترین قدم آپ کو اوچاييو تک لے جا سکتا ہے، لیکن يدي وہی قدم غلط پڑ گیا تو آپ ساری محنت پر پانی پھرنے میں دیر نہیں لگتی اور سب ختم ہو جاتا ہے۔ ایسے میں ضروری ہے کہ آپ کو آپ کی قابلیت کو نكھارے۔ آپ کو آپ کی قابلیت کے بل پر دنیا جیت سکتے ہیں۔ آپ بزنس کو جتنی اچھی طرح آپ سمجھتے ہیں اتنی اچھی طرح کوئی دوسرا نہیں سمجھ سکتا، لیکن آپ کی کچھ عادات کی وجہ سے آپ کو آپ کے بزنس میں نقصان اٹھانا پڑ سکتا ہے۔ اس لئے آپ کو ان باتوں سے بچنے گا، جو آپ کی کامیابی میں رکاوٹ بننے کا کام کر رہی ہیں۔ ائیے جانیں ان عادات کے بارے میں جن سے دور رہنا ایک کاروباری کے لئے سب سے ضروری ہے۔

سب  پر روب جمانے  اور  حکم چلانےسے بچیں

یہ بات اک دم سچ ہے، آپ جو کر رہے ہیں وہ اپنی قابلیت کے بل پر ہی کر رہے ہیں۔ آپ کے ایک ايڈيا نے آپ کی دنیا بدل دی اور آپ نے اسٹارٹپ  کی دنیا میں خود کو ایک تاجر کے طور پر کھڑا کر لیا۔ آپ میں  صلاحیتوں اور دوراندیشی کے ساتھ کچھ  خاص باتیں بھی ہیں، لیکن اس کا مطلب یہ بالکل نہیں ہے، کہ کام سے منسلک تمام چیزوں پر آپ ہی کا حق ہے۔ اگر آپ حقیقی کامیابی حاصل کرنا چاہتے ہیں تو پہلے خود کو کامیاب بنائیں اور خود کے اندر سے "صرف میں" اور "میرا" والے جذبے کو باہر نکال دیں۔ دوسروں پر حکم چلانا کسی کام کے آغاز میں ہی خاتمہ کر سکتا ہے، ٹھیک اسی طرح جب تعلقات میں حقوق کی بات آتی ہے تو تعلق ختم ہو جاتے ہیں۔

مدد مانگنے میں نہ ہچکچائِیں

اگر آپ کامیاب کاروباری  بننا  چاہتے ہیں ، تو کسی بھی کام کو اکیلے کرنے سے بچیں۔ زیادہ سے زیادہ لوگوں کو اپنائیں اور آگے بڑھ کر مدد مانگے۔ کبھی کبھی ایسا بھی ہوتا ہے کہ جو ہمیں مدد مانگنے کے قابل نہیں لگتا وہ بھی ہمارے کام آ جاتا ہے۔ کامیاب ہونا ہے تو اکیلے کام کرنے کی عادت کو چھوڑنا پڑے گا۔ یاد رکھیں، کسی سے مدد اور مشورہ مانگنے میں کوئی برائی نہیں ہے۔ جب آپ مدد مانگنے کے لئے آگے آئیں گے، تو ایسے بہت سے دوست، ساتھی اور جان پہچان والے مل جائیں گے، جنہیں آپ کے کام آنے میں خوشی ہوگی۔ ایک بات ہمیشہ یاد رکھیں، کہ اترپرےنيورشپ میں کامیابی پانا انتہائی مشکل ہے، لہذا ہر ذمہ داری اپنے کندھوں پر ڈال کر بے وجہ مشکلیں بڑھانے کی غلطی کبھی نہ کریں۔

"آج نہیں کل" والی عادت سےدور رہیں

چیزوں کو ٹالتے رہنا انسان کی فطرت ہوتی ہے، لیکن جو لوگ کامیاب ہوتے ہیں، وہ ہمیشہ اس بات سے دور رہتے ہیں۔ ان کے لئے جس کام کو آنے والے کل پر چھوڑنا ممکن ہو پاتا ہے، وہ آج کرنے میں یقین رکھتے ہیں۔ بزنس چلانا کوئی مذاق نہیں ہوتا۔ ہو سکتا ہے آپ کو ای میل کے ساتھ ڈیل کرنا یا پھر ویب سائٹ کو مینج کرنا پسند نہ ہو لیکن بزنس کو چلانے کے لئے  ہر کام میں دلچسپی ہونی انتہائی ضروری ہے۔ جب تک آپ اپنے کام سے منسلک چیزوں میں دلچسپی نہیں ہو گی، تب تک آپ کام کو ٹالتے رہیں گے۔ یاد رہے  کام کو صحیح وقت پر مکمل کریں۔ کام کو ٹالنے کی عادت آپ بزنس پر منفی اثرات ڈالتی ہے اور آپ کو آپ کی منزل اور ٹارگیٹس سے دور لے جا سکتی ہے۔

خود کو کامل سمجھنا کامیابی کا سب سے بڑا دشمن

کوئی بھی شخص کامل نہیں ہوتا۔ ہر کسی سے غلطی ہو سکتی ہے، ہر کوئی کبھی نہ کبھی ناکام ہو سکتا ہے۔ لیکن ایک کامیاب انسان وہی ہوتا ہے جو اپنی ناکامیوں سے سیکھتے ہوئے آگے بڑھتا ہے۔ زندگی چاہے کتنی بار بھی گرائے، گر کر اٹھ جانے کا جنون ہی کامیابی کی سب سے بڑی نشان ہے اور اس کے لئے ضروری ہے خود کو کامل سمجھنے کی غلطی کبھی نہ کریں۔ کیونکہ خود کو کامل ظاہر کرنے کی غلطی میں آپ رسک کی زد میں آ سکتے ہیں۔ کئی بار ایسا ہوتا ہے، آپ کو وہ کام کرنا آتا بھی نہیں، جسے خود کامل ظاہر کرنے کے لئے آپ کو اپنے کندھوں پر اٹھا لیتے ہیں۔ ہمیشہ دوسرے سے سیکھنا چاہئے اور اپنی غلطیوں سے بھی۔ کبھی کبھی خود کو ایک دم ناسمجھ بنا کر دوسروں سے شروع سے سیکھنے کی کوشش کریں۔

اپنا تقابل دوسروں سے نہ کریں

کامیاب لوگ دوسروں کی حوصلہ افزائی کرنے کے لئے ہوتے ہیں۔ دوسروں کی کامیابی سےخود کے بزنس کے راستے میں آنے والی مشکلات کو حل کرنے کے طریقے سیکھ سکتے ہیں۔ آپ ان سے کامیاب ہونا تو سیکھ سکتے ہیں، لیکن ان کی طرح خود بننے کی بالکل ضرورت نہیں ہے۔ کیونکہ ہر شخص اپنے آپ میں دوسروں سے مختلف ہوتا ہے اور کسی کے جیسا بننے کی کوشش میں وہ اپنی حقیقی شخصیت کھونے لگتا ہے۔ دوسروں کو مثالی مانیں، لیکن ان سے اپنا تقابل کبھی نہ کریں۔ دوسرے  تحریک لینے کے لئے ہوتے ہیں۔ جس دن سے آپ موازنہ کرنے لگیں گے اس دن سے ایک عجیب طرح کی مایوسی کو اپنے آس پاس پائیں گے۔

بند کریں شکایتیں کرنا

اگر آپ کو ہمیشہ کسی نہ کسی بات سے شکایت رہتی ہے، تو اپنی اس عادت کو بہتر بنا لیں۔ ہمیشہ شکایت کرتے رہنے سے آپ صرف چیزوں کے منفی پہلوؤں پر ہی توجہ دے پائیں گے۔ اس عادت کی وجہ سے آپ کبھی کسی کی تعریف نہیں کر سکتے۔ ایسے میں دوسرے لوگ کچھ وقت بعد آپ کا ساتھ چھوڑ دیتے ہیں۔ اگر آپ کو کامیاب ہونا چاہتے ہیں تو شيكات کرنے سے پہلے دوسروں کے امتیازات وخصوصیات پر توجہ دینا شروع کریں۔

فضول اخراجات اور عادات سےدور رہیں

بازار تو ہمیشہ بکنے کے لئے تیار رہتا ہے۔ ہر دن وہاں پرانا  کچھ پرانا ہوجاتا ہےاور کچھ نیاآتا ہے۔ لیکن ہر نئی چیز کے پیچھے بھاگنا اور اسے اپنی زندگی کا حصہ بنا لینا سمجھداری نہیں۔ جتنی زیادہ یہ بات گرہستی چلانے کے لئے لاگو ہوتی ہے اتنی ہی بزنس چلانے کے لئے بھی۔ چونکہ آپ ایک اسٹارٹپ  میں کاروباری  کا کردار ادا کر رہے ہیں، تو آپ کی ان عادات سے دور رہنے کی کوشش کریں، جو آپ کی جیب خالی کرنے کام کرتی ہیں۔