بلڈ گروپ 'او' تو آل اِز ویل

90 ہزار لوگوں پر 20 سال سٹڈی کرنے کے بعد یہ نتیجہ سامنے آیا ہے۔

0

کیا آپ کا  بلڈ گروپ اے، بی یا اے بی ہے؟

ہارورڈ اسکول آف پبلک ہیلتھ کے ایک مطالعہ کے مطابق ایسے لوگوں کو دل کی بیماری کا خطرہ او بلڈ گروپ والوں کے مقابلے میں زیادہ ہوتا ہے۔ ایشیا میں 40 فیصد لوگ او بلڈ گروپ کے، اے بلڈ گروپ کے 28 فیصد، بی بلڈ گروپ کے 25 فیصد اور اے بی بلڈ گروپ کے 7 فیصد  ہوتے ہیں۔

یہ راحت والی بات ہے کہ سب سے زیادہ لوگوں کا بلڈ گروپ او ہوتا ہے۔ ڈاکٹروں کے مطابق کورس بلڈ گروپ نہ بدلا جا سکے، لیکن طرز زندگی تبدیل کر دل کی بیماری کا خطرہ ٹالا جا سکتا ہے۔

90 ہزار لوگوں پر 20 سال رسرچ کرنے کے بعد یہ نتیجہ سامنے آیا ہے۔ اس دوران 4070 لوگوں کو دل کی بیماری ہوئی، اگرچہ راست طور پر بلڈ گروپ اور دل کی بیماریوں کا تعلق پتہ نہیں لگ پایا ہے، لیکن مختلف بلڈ گروپ کا کولیسٹرول لیول الگ ہوتا ہے۔ دل کی بیماریوں میں بلڈ گروپ کے علاوہ کھانے پینے، عمر، لائف اسٹائل اور اس بیماری سے منسلک خاندانی تاریخ کا بھی اہم کردار ہوتا ہے۔

اے بلڈ گروپ کے لوگوں کو 8 فیصد، بی کو 11 اور اے بی والوں کو دل کی بیماری کا 20 فیصد خطرہ زیادہ ہوتا ہے، لیکن اس کا یہ مطلب بالکل نہیں ہے، کہ اے بلڈ گروپ والے دل اور طرز زندگی کو لے کر لاپرواہ ہوجائیں۔