'ہم پانچ' اسٹیکرز ڈیزائن کی دنیا کے پانچ ماہرین

0


'آگے بڑھنے کے لئے تھوڑا سا رسک تو لینا پڑتا ہے'

اگر آپ نے کبھی وی چیاٹ، نمبوذ اور لائن جیسے پیغام رسانی  ایپ  چلاتے وقت  اسٹیکرز استعمال کئے ہیں تو بہت ممکن ہے کہ وہ اسٹیکرز پرڈِكس بزنس سليوشنس نے ڈیزائن کئے ہوں۔ آئی آئی ٹی گوہاٹی کے کچھ لڑکوں نے 2012 میں تقریبا تین لاکھ روپے سے اس کمپنی کو شروع کیا تھا۔

کمپنی کے کو-فاونڈر دشینت پالریوال نے بتایا، "پرڈكس ایک ڈیزائن سليوشن فرم ہے۔ لوگ ہمارے ڈیزائن کا استعمال گاہکوں کو اپنی طرف متوجہ کرنے کے لئے کرتے ہیں۔"

کو-فاونڈر منیش نے بتایا، "IIT گوہاٹی میں ہم لوگوں نے ڈیزائن کی تعلیم حاصل کی ہے تو کچھ ایسا ہی کرنا تھا۔ پانچ یار ملے اور کمپنی بنا لی۔ ہمیں لگتا ہے کہ ہندوستان میں ابھی اس کام کا بہت اسکوپ ہے۔"

منیش بتاتے ہیں، "10 سال پہلے لوگ ڈیزائن  بارے میں سنجیدہ نہیں تھے لیکن آج حالات بدل چکے ہیں۔ دراصل، ڈیزائن بہت ساری باتیں بن بولے ہی کہہ دیتا ہے۔ اب تک ہم لوگ جتنی تعداد  میں  کلائنٹس کو خدمات دے چکے ہیں، اس سے ہمیں لگتا ہے کہ ہمارا مستقبل روشن ہے۔ "

فی الحال پرڈِكس، بزنس کے لئے موبائل ایپلی کیشنز، ویب سائٹ، ڈیجیٹل گرافکس وغیرہ بناتے ہیں۔ یعنی پرڈكس گاہک کو آمادہ کرنے کی، انہیں اپنی طرف متوجہ کرنے کی ہر کوشش میں کر رہی  ہے۔

ٹیم پرڈكس نے دیکھا کہ موبائل پیغام رسانی کے لئے اسٹیکرز بنانے والی ڈیزائن فرم بہت کم ہیں اور جو ہیں وہ ہندوستانی ریفرنس میں اسٹیکرز نہیں بناتیں ۔ ایسے میں ٹیم پرڈكس نے اس مارکیٹ میں اترنے کا ارادا کیا۔

منیش نے بتایا، "اپنی جزبے کا اظہار کرنے کےلئے لکھنے سے زیادہ اسٹیکرز بہتر ہیں۔ ایک اسٹیکرز شاید سینکڑوں الفاظ کا کام کرتا ہے۔"

نوجوان ٹیم

پرڈكس کے آغاز کرنے والی ٹیم  میں دشینت پالروال، منیش سگندھی، شبھم جین، رنجو رودرن اور سرجن مولک ۔ یہ تمام لوگ آئی آئی ٹی گوہاٹی سے گریجویٹ ہیں۔ فی الحال ٹیم پرڈكس میں 25 لوگ ہیں۔

پرڈكس کے دو آفس ہیں- بنگلور اور کولکتہ میں۔ منیش بتاتے ہیں، "پانچ افراد نے مل کر جب اس بزنس کو شروع کیا تھا تو بھروسہ تھا کہ کامیابی ملے گی کیونکہ ہم لوگ ایک دوسرے کو بہت اچھے سے سمجھتے ہیں۔"

ٹیم میں ڈیزائنر ہیں، ڈیولپر ہیں، بزنس ڈیولپمنٹ اور فائنانس کے بھی لوگ ہیں۔ فائنانس کی ٹیم میں دلیپ کیجریوال اور ساکیت ماروديا ہیں جو ٹیم کے منٹرس بھی ہیں۔

کامیابی  کے محرک

منیش بتاتے ہیں، "ہم Flipkart، مترا، نمبوذ، لائن، وغیرہ کے لئے کام کر چکے ہیں۔ ہم نے حال فی الحال میں 'شمتابھ' اور سب ٹی وی کے لئے اسٹیکرز بنائے ہیں۔ موبائل ریچارج ویب سائٹ فری چارج کے لئے بھی کام کیا ہے۔ "

وہ بتاتے ہیں، "ہم نے کچھ سرکاری کام بھی کئے ہیں جیسے NHAI اور MRTH کے لئے ہم کام کو صرف کام نہیں سمجھتے، ہم اسے اپنا کام سمجھ کر کرتے ہیں۔"

سرجن  مولک بتاتے ہیں، "ہم لوگ 'کچھ کرتے ہیں' کی  بجائے 'کچھ اچھا کرتے ہیں' سوچتے ہیں۔ مسائل کو صرف حل نہیں چاہئے، انہیں مثال کے طور پر، متاثر کن اور  لگن ضروری ہے۔ جب آپ کو کچھ ڈیزائن کر رہے ہوتے ہیں تو آپ کو صرف کسٹمر کی ضرورت پوری نہیں کر رہے ہوتے، آپ ایک تجربہ  بھی کر رہے ہوتے ہیں۔ "

گلوبل ہو رہا ہے کاروبار

کمپنی نے کئی عالمی کام بھی کئے ہیں اور سب سے بڑا پیغام رسانی  ایپ کے ساتھ بھی کام کیا ہے۔ دشينت بتاتے ہیں، "سب کی ضروریات مختلف ہوتی ہیں۔ لائن  کو اسٹیٹک  اسٹیکرز چاہئے تھے اور وي چیاٹ کو اینيمیٹیذ۔ ہم ان کی ضرورتوں کو سمجھتیں ہیں اور اسی حساب سے کام کرتے ہیں۔"

کمپنی نے کال آف کلچر کے ساتھ مل کر ایک ایپ لانچ کیا جس کا نام ہے قرآنی۔ اس ایپ پر نہ صرف قرآن کو پڑھا جا سکتا ہے بلکہ سنا بھی جا سکتا ہے۔ یہ استعمال كرنے والوں کو نماز کا ٹائم بھی بتاتا ہے۔

منیش بتاتے ہیں کہ فی الحال مڈل ایسٹ سے کافی اچھا ریسپنس مل رہا ہے اور آنے والے وقت میں امریکی مارکیٹ میں بھی کاروبار کو پھیلانے کا منصوبہ  ہے۔

'کام کی تعریف ہوتی ہے تو اچھا لگتا ہے'

منیش بتاتے ہیں، "وقت کے ساتھ ہم نے کافی ترقی کی ہے، بہت کچھ نیا بھی سیکھا ہے۔ ہمارے ڈیزائن کو جب تعریف ملتی ہے تو بہت اچھا لگتا ہے۔ ہم نے 'انگری انٹی' کو پیدا کیا، اس کو کافی تعریف ملی، 25- 30 ممالک میں اسے دیکھا گیا۔ ہم نے اسے تھری ڈی میں بھی بنایا، اب ہم اس کا نیا ورژن بنا رہے ہیں۔ "

"آرٹ آف لیونگ کے لئے بھی ہم کام کر رہے ہیں۔ ان کی ویب سائٹ، ایپلی کیشنز، سٹيكرس پر ہم کام کر رہے ہیں۔ ایک نیا کام بھی ابھی شروع کیا ہے۔ پہلے لوگ پاورپائنٹ پرجینٹنشن دیتے تھے لیکن اب انیمیشن دکھایا جاتا ہے، ابھی اس پر ہم کام کر رہے ہیں۔ "

وہ بتاتے ہیں، "اِروذ اٹرٹینمنٹ کے ساتھ بھی ہم نے کام کیا ہے۔ مڈل ایسٹ کے بھی کچھ کام کئے ہیں۔ بات صرف اتنا ہے کہ کام دل سے کرو تو اچھا ہو ہی جاتا ہے، ڈیزائن ہمارا جذبہ ہے۔"

پریشانیاں نہیں روک پائیں راستہ

منیش بتاتے ہیں، "ایسا نہیں ہے کہ ہمارے سامنے پریشانیاں نہیں آئی لیکن یہ پریشانیاں ہمارا راستہ نہیں روک پائیں۔ ہمارے سينيرس اور مینٹرس نے ہماری بہت مدد کی۔"

"اگر دل میں کچھ کرنے کی چاہ ہو تو پھر پریشانیاں  راستہ نہیں روک پاتیں۔ کبھی کبھی کچھ وقت کے لئے رکاوٹ آ سکتی ہے لیکن وہ آپ کو آگے بڑھنے سے نہیں روک سکتی۔"

بقول منیش، "ہم صرف پیسہ کمانے کے بارے میں نہیں سوچتے بلکہ صارف  کے  ساتھ تعالقات  اور ان کے  کام  کو بہتر بنانا ہمارا مقصد ہے۔"

Related Stories