کمپنی شروع کرنے کے بعد ان باتوں کا خیال ضروررکھیں

0

گزشتہ کچھ عرصے میں ہندوستان میں جس رفتار سے اسٹارٹپس کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے وہ ملک کی ترقی کے لئے بہت اچھا ہے۔ نئی نئی کمپنیاں نوجوانوں کو روزگار تو دے ہی رہی ہیں، ساتھ ہی یہ ملک کی ترقی کی رفتار کو بھی بڑھا رہی ہے۔ ان اسٹارٹپس کی وجہ سے آج نوجوان پیسہ کمانے پر کسی پر منحصر نہیں ہیں وہ خود اپنی کمپنی کھول کر دوسروں کو کام دے رہے ہیں۔

انٹرنیٹ بھی ان اسٹارٹپس کی آگے بڑھنے میں کافی مدد کر رہا ہے۔ جس کی وجہ سے یہ کمپنیاں نئی نئی بلندیوں کو چھو رہی ہیں۔ لیکن ایک بار جب آپ کی کمپنی انكارپوریٹ ہو جاتی ہے تو آپ کو مختلف چیزوں کا خاص خیال رکھنا ہوتا ہے۔

1- سی آئی این ڈسپلے- انكارپوریشن کے فوری بعد آپ کو آپ کی کمپنی کے بورڈ اپنے رجسٹرڈ آفس کے باہر لگائیں کریں۔ اس بورڈ میں مختلف چیزوں کو شامل کریں

کمپنی کا نام

کمپنی کا رجسٹرڈ پتہ

ٹیلی فون نمبر اور ای میل ایڈریس

ویب سائٹ ایڈرس اور فیکس نمبر

ان تمام ڈٹیلس کو کمپنی کے سارے بزنس لیٹرس، انوسج، لیٹرهیڈس، میلز وغیرہ میں ضرور شامل کریں۔ کمپنیز ایکٹ 2013 کے اصولوں کے مطابق بھی رجسٹریشن نمبر ہر ڈاکومنٹ میں رکھنا لازمی ہے اور اگر آپ ایسا نہیں کرتے تو آپ کو 1 ہزار روپئے یومیہ کے حساب سے جرمانہ دینا ہوگا اور اس جرمانے کی رقم 1 لاکھ روپئے تک ہے۔

2- آڈٹر کا تقرر- معلومات کی عدم موجودگی میں عموماً زیادہ تر نئی اسٹارٹپس اس پر دھیان نہیں دیتی۔ کمپنیز ایکٹ 2013 کے آرٹیکل139 (6) کے مطابق سرکاری کمپنی کو چھوڑ کر ہر کسی كپني کو انكارپوریشن کے 30 دن کے اندر ایک آڈیٹر کا تقرر کرنا لازمی ہے۔ اگر بورڈ آف ڈائریکٹر ایسا نہیں کرتے تو 90 دن کے اندر ایک جنرل میٹنگ کرکے آڈیٹر کا تقرر کرنا ہوگا۔

سادہ زبان میں کہیں تو ایک آڈیٹر ایک چارٹیڈ اكاونٹینٹ ہونا چاہئے اور اس کا تقرر 30 دن کے اندر ہو جانا چاہئے۔ ADT-1 فارم کو منسٹری آف کارپوریٹ افیئر کی ویب سائٹ سے لیں۔ کہنے کا مطلب ہے کہ آپ کو ایک چارٹیڈ اكٹےٹ کی تلاش ہے جو آپ کے اس فارم کو بھر سکے۔

کمپنیز ایکٹ 2013 کے سیکشن 147 کے مطابق اگر سیکشن 139 (6) کی خلاف ورزی کی گئی تو کمپنی کو 25 ہزار سے لے کر 5 لاکھ تک کا فائن دینا پڑ سکتا ہے۔

3- پین اور ٹین کے لئے درخواست - کمپنی کے لئے یہ لازمی ہوتا ہے کہ اس کا اپنا پین اور ٹین نمبر ہو۔ تو جیسے ہی کمپنی انكارپوریٹ ہو تو فوری طور پر پین اور ٹین بڑی تعداد کے لئے اپلاي کر دیں۔ پین اور ٹین نمبر ملنے میں اب کوئی دقت نہیں آتی۔

4- اسٹاک سرٹیفکیٹ شائع كرنا- کمپنیز ایکٹ 2013 کے مطابق کمپنی کو انكارپوریشن کے 2 ماہ کے اندر میمورنڈم آف ایسوسی ایشن کے تمام سبسكرائبرس کو شیئر سرٹیفکیٹ الاٹ کرنا ہوتا ہے۔ اس میں یہ بھی لکھا گیا ہے کہ تمام سبسكرائبرس کو سبسکرپشن کا پیسہ بھی کمپنی کے بینک اكاونٹ میں جمع کرنا ہوتا ہے۔

ہم کمپنیوں کو یہی رائے دیتے ہیں کہ کمپنیاں ایک بینک اکاؤنٹ کھولیں، آرٹیکل آف ایسوسی ایشن کی مدد سے اور پھر تمام سبسكرائبرس سے چیک لے کر کمپنی کے بینک اکاؤنٹ میں جمع کریں۔

تحریر- وویک سومانی

Related Stories