یہاں ملازمین کا 'ماں باپ' بننا منافع بخش ہے

0

نئی نسل کے بہت سارے نوجوان ماں باپ بن کر بچوں کی زمہ داری اٹھانے کو بوجھ سمجھتے ہیں۔ لیکن اب نئی کارپوریٹ کمپنیاں اس زمہ داریوں کو فایدہ بخش بنا رہی ہیں۔ اب کمپنیاں خود کو ذمہ دار تنظیم دکھانے کی کوشش کر رہی ہیں۔ اس کے ذریعے وہ نہ صرف گاہکوں کو متوجہ کرنے کی کوشش کر رہی ہیں بلکہ ملازمین کو کمپنی میں روکے رکھنے کے لئے زچگی اور باپ ہونے سے منسلک فوائد بھی دے رہی ہیں۔

ماہرین کے مطابق بینگلر کی کمپنی فلپكارٹ نے زچگی سے متعلق اپنی چھٹی کی پالیسی پر نظر ثانی کر اس سال جولائی میں اسے 24 ہفتے کر دیا ہے۔ اس کے علاوہ کئی دیگر کمپنیاں مثلا مونڈیلیج انڈیا فوڈز: (کیڈبری انڈیا ):، ممبئی کی ریئل اسٹیٹ کمپنی کے رهجا کارپ، ایپ کی بنیاد پر فیشن خوردہ فروش مِنترا نے نئی چیزیں شامل کرتے ہوئے اپنی پالیسی کی تشکیل نو کی ہے۔

مونڈیلیج انڈیا فوڈز کی ڈائریکٹر: انسانی وسائل: پی مہالکشمی نے کہا، '' ہم اس چیز کو سمجھتے ہیں کہ کچھ اضافی تعاون ملازمین کو نئے مرحلے میں جانے کے لئے زیادہ حوصلہ افزا ثابت ہوتا ہے۔ اسی کے مطابق موجودہ زچگی پالیسی کی تشکیل نو کی گئی ہے اور اپریل، 2015 میں نئی پالیسی پیش کی گئی ہے۔ '' '' نئی والدین پالیسی 'لازمی زچگی کی چھٹی سے کچھ ذاید فائدے دیتی ہے۔ اس میں اس بات کو بھی دیکھا گیا ہے کہ مرد ساتھیوں کو بھی اس دوران ذمہ داریاں اٹھانی پڑتی ہیں۔''

اسی طرح کے رهیجا کارپ نے 'اڈاپشن اسسٹینس پالیسی' پیش کی ہے۔

ایگزیکٹو کی تلاش کرنے والی کمپنی گلوبل هنٹ کے منیجنگ ڈائریکٹر سنیل گوئل نے کہا کہ نئی نسل کے کاروبار کافی مسابقتی ہیں۔ زیادہ تر عالمی تنظیم خود کو نہ صرف ایک ذمہ دار ادارے کے طور پر دکھانا چاہتے ہیں بلکہ وہ غیر ملکی گاہکوں کو متوجہ کرنے کے ساتھ ساتھ ملازمین کو کمپنی میں روکنا چاہتے ہیں۔