اسٹارٹپ کی تیاری میں اوپن اسکول کی مدد لیں

0

وزیر اعظم نریندر مودی کا کافی اہم منصوبہ اسٹارٹپ اینڈیا کو کامیاب بنانے میں ملک کے نوجوان بھی اپنی طرف سے مسلسل کوشش کر رہے ہیں۔ اسٹارٹپ کلچر کی کامیابی کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ آئی آئی ٹی کے دو طالب علموں نے اس سمت میں آنے والے نئے اسٹارٹپ کی صحیح رہنمائی کے لئے ایک پلیٹ فارم تیار کیا ہے۔ اکثر سننے میں آتا ہے کہ ابتدائیہ اسٹارٹپ کے لئے تیار تو ہیں لیکن سمجھ میں نہیں آ رہا ہے کہاں سے شروعات کی جائے۔ انہی مسائل کو حل کرنےکے لئے دو نوجوان سامنے آئے ہیں۔

آئی آئی ٹی کے طالب علموں رتیش سنگھ اور اکشت گوئل نے ایک مخصوص اوپن اسکول مواصلات اور سوشل لرننگ پلیٹ فارم شروع کیا ہے، جس کے ذریعے استاد، والدین اور طالب علم کے موبائل فون پر کھل کر مؤثر طریقے سے بحث کر سکتے ہیں۔

رتیش سنگھ اور اکشت گوئل مؤثر طریقے سے علم کی منتقلی کے لئے اختراعی حل فراہم کرنا چاہتے ہیں۔ اسی لیے انہوں نے اكوویشن نام سے اسٹارٹپ شروع کیا۔ اس کا قیام مارچ، 2014 میں کیا گیا اور اس ایپ کو اسی سال جون میں ایک سال تک مارکیٹ کی تحقیق اور مطالعہ کے بعد پیش کیا گیا۔

اكوویشن کے چیف ایگزیکٹو سنگھ بہار کے تیسری قسم کے شہر چھپرہ سے ہیں۔ اسٹارٹپ سے ہی ان زبان سے متعلق مسائل کا سامنا کرنا پڑا۔

انہوں نے کہا، '' میں نے ہمیشہ ایسے کام کے بارے میں سوچتا تھا جس سے میرے جیسے لوگوں کو مدد مل سکے جنہیں اسٹارٹپ میں معیاری تعلیم سے محروم رہنا پڑا ہے۔ میں ہمیشہ ان جگہوں پر بھی معیار کے تعلیم فراہم کرنا چاہتا تھا جہاں صرف کم از کم ڈھانچہ دستیاب ہے۔ ''

انہوں نے کہا کہ ہم نے چار شہروں میں 30000 طلباء کے ساتھ مارکیٹ کا مطالعہ کیا۔ ان کے مطابق پيٹيیم میں صرف 15 سے 20 فیصد والدین ہی آتے ہیں۔ ایسے میں ہم نے ایسا مصنوعات بنانے کا فیصلہ کیا جس کے ذریعے والدین، طالب علم، تعلیم اور اسکول انتظامیہ کو مباحث کے لئے پلیٹ فارم مل سکے۔ اكوویشن سے نہ صرف والدین کو اساتذہ کے ساتھ جڑنے میں مدد ملتی ہے، بلکہ اس سے طالب علم ایسے اساتذہ سے بھی رابطہ کر سکتے ہیں جو کلاس کے باہر علم کا بانٹنے کے لیے تیار ہیں۔