اسٹارٹپس کاروبار کو آسان بنانےکے لئے ریزرو بینک کا منصوبہ

0

ابتدائیہ کاروبار اسٹارٹپس شروع کرنے والوں کے لئے ایک بہت ہی سکون دینے والی خبرہے۔ ملک میں اسٹارٹپس کے مثبت ماحول کو دیکھتے ہوئے ہندوستان کی ریزرو بینک نے ایک اہم اعلان کیاہے۔ ملک بھر کے اسٹارٹپس کاروبار کو آسان بنانے کے لئے بینک نے جو اعلان کیا ہے وہ ابتدائیہ کاروبار کرنے والے کاروباریوں کو خاصی راحت دینے والا ہے۔ یہ اعلان مانیٹری پالیسی کا جائزہ لینے کے دوران کیا گیا۔

ابتدائیہ بزنس کے لئے ریزرو بینک بنائے گا فریم ورک:

ریزرو بینک کے گورنر راجن رگھو رام راجن نے کہا کہ ايج آف ڈوگ بزنس کے لئے مرکزی بینک اہم قدم اٹھائے گا۔ ابتدائیہ بزنس کی ترقی کے لیے ہر ممکنہ اقدام آٹھانے کے لئے آر بی آئی جلد ہی ایک فریم ورک بنائے گا۔ اس فریم ورک کے بن جانے کے بعد ملک بھر میں ابتدائی کاروبار کے لئے مشکلیں آسان ہوں گی۔ ریزرو بینک کے گورنر رگھو رام راجن نے اپنے اعلان میں اسٹارٹپس کی مدد کرنے کی پیشکش کی ہے اور کہا ہے کہ ریزرو بینک (RBI) کاروبار کو سہل بنانے کے لئے پہل کرے گا اور ایک ایسا نظام بنانے میں اہم کردار ادا کرے گا، جس سے اسٹارٹپسکی حوصلہ افزائی ہو سکے۔ ریزرو بینک کے اس نظام سے اس سیکٹر کے ترقی کے لئے انتہائی سازگارحاتال پیدا ہوںگے۔ راجن کے مطابق یہ اسسٹم اس طرح ہوگا کہ اس سے اسٹارٹپس کو غیر ملکی وینچر کیپیٹل یا نجی ایکوئٹی فنڈ سے قرض حاصل کرنے کے لئے موزوں ڈھانچہ مل پائےگا۔ ریزرو بینک کی طرف سے اٹھائے جانے والے اقدامات سے اسٹارٹپس کے لئے غیر ملکی فنڈنگ کی راہ آسان ہو جائے گی۔ آوٹ وارڈ رميٹینس کے عمل کو بھی آسان بنانے کا منصوبہ ہے۔ اتنا ہی نہیں رگھو رام راجن کے مطابق حکومت کے ساتھ مل کر ریزرو بینک اسٹارٹپس کے لئے کچھ ایسے قدم اٹھانے جا رہا ہے، جس سے پورا عمل بہت ہی اور سہل ہوگا۔

مبادلہ زر پالیسی کے اعلان کے دوران راجن نے کہا کہ اسٹارٹپس کے بارے میں نئے ہدایات حکومت کے اسٹارٹپس انڈیا جیسی منصوبےکو دیکھتے ہوئے اٹھائے گئے ہیں۔ اس میں ایک ایسے اكوسسٹم کو بنانا ہے جو اسٹارٹپس کے ترقی کے لئے مددگار اور فائدہ بخش ہو۔ اسٹارٹپس کی مدد کے لئے ریزرو بینک نے ایک ہیلپ لائن ای میل بھی بنایا ہے helpstartup@rbi.org.in ریزرو بینک کے گورنر نے امید ظاہر کی کہ ہے کہ اس ای میل سے اسٹارٹپس کاروباریوں کو معلومات حاصل کرنے میں کافی مدد ملے گی۔

ریزرو بینک کا قدم اہم کیوں ؟

عالمی اسٹارٹپس اكوسسٹپم میں ہندوستان تیسرے نمبر پر پہنچ گیا ہے۔ ملک میں رجسٹرڈ اسٹارٹپس کی سالانہ ترقی 40 فیصد ہے۔ ٹیکنالوجی کی بنیاد والے سٹارٹپس کے معاملے میں ہندوستان اب صرف امریکہ اور برطانیہ سے پیچھے ہے۔ ایسے میں یہ کہنا غلط نہیں ہوگا کہ ہندوستان اسٹارٹپس کے لئے منزل بن رہا ہے۔ اور حال ہی میں مرکز کی مودی حکومت نے اسٹارٹپس انڈیا کا منصوبہ لانچ ہے۔ ملک کی تقریباً 70 فیصد آبادی اب بھی گاؤں میں رہتی ہےاور ملک کے جی ڈی پی میں درجے -1 اور درجے -2 شہروں کی حصہ داری کافی زیادہ ہے۔ ایسے میں یہاں کاروبار شروع کرنے کے لئے بڑی مارکیٹ اور اختیارات موجود ہے۔ ایگری بزنس، ہائپر لوکل، ای کامرس، ادائیگی سے منسلک اسٹارٹپس کے لئے مواقع ہیں کہ وہ اسان فنڈنگ اور بہتر اكوسسٹم کے بعد چھوٹے شہروں اور دیہات تک میں اپنی پہنچ بنا سکتے ہیں۔