اپنا شوق سنوارو، سرمایہ داروں کے لئے اپنا کاروبار مت شروع کرو:شیلندر سنگھ

0



سردياں ہر سال آتی ہیں۔ اس میں نیا کچھ بھی نہیں ہے۔ اسی طرح اگر آپ اسٹارٹپ کے ماحول سے تعلق رکھتے ہیں تو آپ گزشتہ موسم سرما کے ماحول سے اس کا مواذنا کرتے ہیں، لیکن آخر کار موسم گرما کے شروع ہوتے ہی موسم سرما کی باتیں پھیکی پڑتی رہتی ہیں۔ موسم سرما کے دن کافی خشک گزرتے ہیں۔ ان دنوں سرمایہ کاری کا ماهول بھی کافی سست رہتا ہے۔ اس کے نتیجے میں بہت سے کاروبار زوال پذیر ہو جاتے ہیں اور کچھ تو بند بھی ہو جاتے ہیں۔

ٹیكسپارك 2016 میں سےكوايا کیپٹل کے منیجنگ پارٹنر شیلندر سنگھ نے موسم سرما پر اپنی بات رکھی۔ انہوں نے کہا کہ موسم سرما کا لطف اٹھایئے۔ یہ بڑا خوبصورت موسم ہے۔ گزشتہ سال کے موسم سرما کے مقابلے میں اس بار کمپنیوں کی حالت بہتر ہے۔ اگر آپ پچھلے سال کے موسم سرمایہ سے اس کا مواذنا کرتے ہیں تو پتہ چلتا ہے کہ گزشتہ سال سےاسٹارٹپ کے لئے یہ سال بہت بہتر ہے۔ گزشتہ سال کئی کمپنیوں کو مسائل کا سامنا تھا، سرمایہ لگانے کے باوجود بازار کی حالت اچھی نہیں تھی۔ گاہک کا انتظار کرنا پڑتا تھا۔ اس سال حالات ایسے نہیں ہیں۔ شیلیندر نے کہا کہ کس شعبے میں اچھا ماحول ہے اور کس شعبے میں اچھا نہیں ہے، یہ بتانا اسٹارٹپ کے لئے غلط ہوگا، کیوں کہ یہ بتایا جائے تو کاروباری اسٹارٹپ میں آگے بڑھنے کی ہمت ہی نہیں کریں گے۔ فنٹیک اس بار اچھا کام کرنے کی توقع ہے، فريچارج، موبكوک اور پینٹيم کے لئے بھی خوشخبری کا ماحول ہے۔

اسٹارٹپ عام طور پر چھوٹے چھوٹے مقاصد کے ساتھ کام کرتے ہیں اور سرمایہ بھی اسی کے مناسبت سے لگاتے ہیں، لیکن شیلندر سنگھ نے کہا کہ ایسا کرنا غلط ہے۔ ہندوستان میں بہت سی کمپنیاں نفع میں چل رہی ہیں۔ ان کی ترقی کی رفتار بہت اچھی ہے، لیکن میڈیا انہیں اس نقطہ نظر سے نہیں دیکھتا اور نہ ہی سرمایہ کاری کے بارے میں کسی ترح کی خبریں وہ دیتے ہیں۔ شاید کمپنیاں بھی اپنی كمايابي كےبارے میں بتاتے ہوئے فخر کا احساس نہیں کرتیں۔

 شیلندر نے بتایا کہعالمی سطح سے ہندوستان میں سرمایہ کاری کے لئے اچھا موقع ہے، لیکن کچھ لوگ اس بازار کی گہرائی میں جا کر کچھ سوالات ضرور اٹھا رہے ہیں۔ کچھ لوگوں کا کہنا ہے کہ ای کامرس میں کمپنیوں کی بھیڑ کی وجه سے اس شعبے میں کچھ كسادباذاري کے امكانات ہیں۔ ہندوستان ترققي پذير معیشت ہے اور یہاں امکانات کافی ہیں۔ بدلتے حالات پر گہری اور دور رس نظر رکھنے کی ضرورت ہے۔ تبھی کہیں جاکر ہم مستقبل کا صحیح اندازہ لگا سکتے ہیں اور اسی کے مطابق سرمایہ کاری کرنا آسان ہو سکتا ہے۔ غلط کچھ بھی نہیں ہوگا یہ کہنا بی غلط ہوگا۔

كاراباريوں کی ایک عام غلطی کے بارے میں شیلندر نے بتایا کہ کئی کاروبار اس بات کی کوشش کرتے رہتے ہیں کہ انہیں سرمایہ ملے اور سرمایہ داروں کے ساتھ کام کرنے میں وہ خوشی محسوس کرتے ہیں، لیکن انہیں اس کے بجائے آپ کے کاروبار میں کیا ضروری ہے اور انہیں کس بات کا شوق ہے، اس بات پر زیادہ توجہ دینا چاہئے۔

تحریر جئے وردھن

Related Stories